میٹا (meta) کا واٹس ایپ(whatsapp) صارفین کے لئے جلد مصنوعی ذہانت(artificial intelligence)والے چیٹ بوٹس(chat bots) متعارف کرانے کا اعلان

urdrezi : always online
By -

چیٹ جی پی ٹی (chat GPT) کی لانچنگ کے بعد سے ہی ٹیکنالوجی کی دنیا میں مصنوعی ذہانت(artificial intelligence) کی ایک نئی دوڑ دیکھنے کو مل رہی ہے۔ ایسے میں واٹس ایپ اور فیس بک کی مالک کمپنی میٹا، جو کہ مصنوعی ذہانت کی دنیا میں ایک بہت بڑا نام سمجھا جاتا ہے، کسی سے پیچھے کیسے رہ سکتے ہیں۔

 چیٹ جی پی ٹی کی قابل ذکر مقبولیت کے بعد مارک زکر برگ کی کمپنی میٹا نے بھی چیٹ جی پی ٹی جیسا ai بوٹ متعارف کرنے کا اعلان کیا۔ یہ چیٹ بوٹ جلد ہی واٹس ایپ صارفین کو مفت استعمال کے لئے میسر ہوگا 

 واٹس ایپ پر AI چیٹ بوٹ متعارف کرانے کے بعد صارفین کے لیے فوری، درست اور مستند معلومات تک اور بھی آسان ہو جائے گی۔


یہ AI چیٹ بوٹ فیچر، جو فی الحال اینڈرائیڈ ڈیوائسز کے لیے صرف بیٹا ورژن میں دستیاب ہے۔

اس AI چیٹ بوٹ کا بنیادی مقصد، ChatGPT کی طرح، صارفین کو مختلف موضوعات کی ایک وسیع صف میں قابل اعتماد اور جامع معلومات فراہم کرنا ہے۔ نیچرل لینگویج پروسیسنگ اور وسیع ڈیٹا بیس سے فائدہ اٹھاتے ہوئے، ان چیٹ بوٹس کا مقصد صارف کے سوالات کو فوری اور درست طریقے سے حل کرنا ہے۔ چاہے یہ خبروں، جنرل نالج، یا کسی بھی موضوع پر پوچھے گئے سوالات ہوں، AI چیٹ بوٹ فوری طور پر مستند اور متعلقہ معلومات فراہم کرنے کی کوشش کرتا ہے۔
 ہے۔

واٹس ایپ جیسے مقبول پلیٹ فارم پر مصنوعی ذہانت والے چیٹ بوٹ کا شامل کیا جانا۔ دیگر ai کمپنیز کے لئے بھی ایک بہت بڑا چیلنج ثابت ہو سکتا ہے

تاہم، اس قسم کی فیچر کے چلتے صارفین کے ڈیٹا سیکیورٹی پر ایک مرتبہ پھر سے تشویش کا اظہار کیا جارہاہے۔ جیسا کہ اس سے قبل 2017 اور 2021 میں پاکستان سمیت دنیابھر کے کروڑوں صارفین کا ڈیٹا ڈارک ویب پر فروخت کے لیے پیش کیا جا چکا ہے، ایسے فیچر کے بعد صارفین کے ڈیٹا کا تحفظ کرنا میٹا کے لیے پہلے زیادہ اہم ہوگا۔ 

#buttons=(Ok, Go it!) #days=(20)

Our website uses cookies to enhance your experience. Learn more
Ok, Go it!